کورونا وبا کے باعث 14 کروڑ افراد غربت کی لکیر سے نیچے چلے گئے، اقوام متحدہ

35 کروڑ افراد کو خوراک کی کمی کا سامنا ہوسکتا ہے، فوٹو : فائل

35 کروڑ افراد کو خوراک کی کمی کا سامنا ہوسکتا ہے، فوٹو : فائل

جنیوا: اقوام متحدہ کی ذيلی ايجنسيوں کی جانب سے جاری رپورٹ میں متنبہ کیا گیا ہے کہ کورونا وبا کی وجہ سے ايشيا پيسيفک خطے ميں 35 کروڑ افراد کو خوراک کی کمی کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے۔

عالمی خبر رساں ادارے کے مطابق اقوام متحدہ کی ذیلی ایجنسیوں نے کورونا وبا سے دنیا بھر میں ہونے والے اثرات کا جائزہ لیا۔ جائزہ رپورٹ میں امکان ظاہر کیا گیا ہے کہ کورونا وبا کے باعث 35 کروڑ افراد کو خوراک کی کمی کا سامنا ہوسکتا ہے۔

رپورٹ میں یہ بھی انکشاف کیا گیا ہے کہ کورونا کی وبا کی وجہ سے ایک ارب 90 کروڑ افراد تندرست غذا کا بندوبست نہيں کر پا رہے ہیں جب کہ 14 کروڑ افراد غربت کی لکير سے نيچے چلے گئے ہيں۔

رپورٹ میں انکشاف کیا گیا ہے کہ کورونا وبا سے خوراک میں کمی کا شکار ہونے والے متاثرين ميں سب سے زيادہ تناسب جنوبی ايشيائی ممالک کے شہريوں کا ہے اور ایسا  وبا کی وجہ سے بیروزگاری میں اضافہ ہوا ہے اور کاروباری سرگرمیاں ٹھپ ہوجانے کے باعث ہوا۔

واضح رہے کہ دنیا بھر میں کورونا سے متاثر ہونے والوں کی تعداد 9 کروڑ 41 لاکھ 24 ہزار اور 612 ہوگئی ہے جب کہ اس مہلک وائرس سے ہلاک ہونے والوں کی تعداد 20 لاکھ 34 ہزار اور 527 ہوگئی ہے۔

50% LikesVS
50% Dislikes

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

ur Urdu
X
براہ راست